صفحات

ہفتہ, اکتوبر 31, 2009

غصہ

کچھ لوگ ایسے ہوتے ہیں۔ جن کا غصہ ہر وقت ناک پر ہوتا ہے۔ یہ بھی غصے کی ایک قسم ہے۔ لیکن ایسے غصہ سے بہت کم ہی لوگ اثر لیتے ہیں۔ کیونکہ یہ غصہ وقت بے وقت آنے کی وجہ سے اپنا اثر کھو چکا ہوتا ہے۔ ایسے لوگوں کا غصہ ، غصہ نہیں کہلاتا۔ ایسے لوگ جب بھی غصہ کرتے ہیں۔ تو باقی لوگ اُسے نارمل سمجھتے ہیں۔ اور کہتے ہیں۔ کہ یہ تو اُس کی عادت ہے۔
کچھ لوگ ایسے ہوتے ہیں۔ جو کبھی کبھار غصے کا اظہار کرتے ہیں۔ اَن کا غصہ اثر دار ہوتا ہے۔ اور لوگ اُس غصے سے ڈرتے بھی ہیں۔ ایسے لوگ اپنے غصے کا اظہار تب کرتے ہیں۔ جب کچھ غلط ہو۔ یا کوئی کام اُس شخص کے مزاج کے بر خلاف ہوجائے۔
کچھ ایسے بھی ہوتے ہیں جو اپنے غصہ کو دبا کر رکھتے ہیں۔ اور کبھی بھی اِس کا اظہار نہیں کرتے ہے۔ ذرا سوچئے کہ جب ایسے لوگ جس نے کبھی بھی اپنے غصے کا اظہار نہیں کیا ہو۔ جب وہ اپنے غصے کا اظہار کرے گا۔ تو اُس کا غصہ کتنا خوف ناک ہوگا۔ اور یہ بھی سوچئے کہ جب ایسے شخص کا ضبط کا دامن چھوٹ جائے گا۔ تو وہ کس طرح ری ایکٹ کرے گا۔
ویسے شور یہ سوچ رہا ہے۔ کہ آجکل کے اس ٹینس بھر ماحول میں شاید ہی کوئی ایسا ہوگا جو اپنے غصے کو کنٹرول کرتا ہوگا۔اور اگر کوئی ایسا ہے تو اُس بندے کو سُرخ سلام۔۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں