صفحات

سوموار، 26 جولائی، 2010

No Comments

ٹھنڈی ہوا جو روح میں اتر رہی ہے۔ کھڑکی سے آکر مجھے اتنا سکون دے رہا ہے۔ کہ جی چاہتا ہے۔ بس یونہی آنکھیں بند کر کے اِس ہوا کی ٹھنڈک کو محسوس کر تا رہوں۔ دھیمے سُروں میں بجنے والا خوبصورت گانا جسے سن کر “اُسے” میں اپنے آس پاس محسوس کرنے لگا ہوں۔
شور! یہ “اُسے” “کسے”ھم جان سکتے ہیں۔
نہیں۔کبھی نہیں۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں